جب بھی کبھی اداس ھونا ھوں میں's image
1 min read

جب بھی کبھی اداس ھونا ھوں میں

Kazi Azmad KamalKazi Azmad Kamal June 16, 2020
Share0 Bookmarks 100 Reads0 Likes

جب بھی کبھی اداس ھونا ھوں میں

دل سے تمہیں یاد کر لیتا ھوں میں

وہ پاس تھے تو کوی اھمہت نہ تھی

باپ کی کمی سے آج روتا ھوں میں

دل رہتا ھے بیزار انسے ملنے کو اب 

مشکل سے من کو بہلاتا ھوں میں

کیوں چھوڑ کہاں جاتے ھیں اپنے لوگ

یہ سوچکر بیچیں ہو جاتا ھوں میں

بچے انتظار کرتے دھتے ھیں روز میرا

باھر سے جب بھی گھر آتا ھوں میں

عمر تیزی سے گزرتی جا رہی ھے

یہی سوچکر اب گھبراتا ھوں میں

عشق اور فریب کی اس دنیا میں

کیا پتہ کس کو بھاتا ھوں میں

نہ جانےکب دک جایں سانسے کمال

یہ سوچکر دل نھیں ستاتا ھوں میں


No posts

Comments

No posts

No posts

No posts

No posts